حکومت غیر اسلامی قانون سازی سے باز رہے(مولانا زاہد الراشدی)

حکومت غیر اسلامی قانون سازی سے باز رہے(مولانا زاہد الراشدی)

گکھڑمنڈی (محمد گلشاد سلیمی)حکومت غیر اسلامی قانون سازی سے باز رہے ملی مجلس شرعی جو تمام دینی مکاتب فکر کا مشترکہ علمی پلیٹ فارم ہے ، اس کے صدر مولانا زاہد الراشدی ، جنرل سیکرٹری ڈاکٹر محمد امین اور مولانا ڈاکٹر راغب حسین نعیمی،مولانا حافظ عبدالغفار روپڑی،مولانا عبدالمالک،مولانا حافظ فضل الرحیم ، مولانا عبدالرﺅف فاروقی،مولانا ملک عبدالرﺅف ،ڈاکٹر فرید احمد پراچہ، علامہ محمد خلیل الرحمن قادری،مولانا ڈاکٹر حسن مدنی، حاجی عبداللطیف چیمہ،قاری جمیل الرحمن اختر، حافظ محمد نعمان اور دیگر علماءکرام نے زنا کے بڑھتے ہوئے رجحان کے سد باب کے لیے نئی غیر اسلامی قانون سازی کی مذمت کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ دستور میں موجود شرعی حدود کو نافذ کرے نہ کہ اپنے پاس سے ا±لٹے سیدھے قوانین بنائے، خصوصاً اس صورت میں کہ اللہ تعالیٰ نے ان لوگوں کو قرآنی تعلیمات انہیں ظالم، فاسق اور کافر قرار دیا ہے علماءکرام نے متحدہ عرب امارات میں شراب نوشی اور بغیر نکاح کے اکٹھے رہنے کی اجازت دینے والے قوانین پر بھی تشویش کا اظہار کیا کہ ا±مت مسلمہ میں شریعت پر عمل کرنے کی بجائے غیر شرعی قوانین بنانے کا رجحان فروغ پارہا ہے۔ دریں اثناءمجلس کے صدرمولانا زاہد الراشدی اور جنرل سیکرٹری ڈاکٹر محمد امین نے منصورہ میں سراج الحق سے ان کی والدہ، جامعہ المنتظر میں علامہ نیاز نقوی اور جامعہ رحمة اللعالمین میں مولانا خادم حسین رضوی کے انتقال پر اظہار تعزیت کیا

Leave your comment
Comment
Name
Email