اجتماعی شادیاں ، مستحسن اقدام

اجتماعی شادیاں ، مستحسن اقدام

  • شیر محمد علی انصاری)عالمی چادر اوڑھ تحریک کے زیر اہتمام اجتماعی شادیوں کی تقریب آج مقامی میرج ھال میں منعقد ہوئی جس کے روح رواں ممتاز عالم دین صاحبزادہ ڈاکٹر پیرسید غلام مصطفے شاہ گردیزی صاحب ہیں جنہوں نے حسب سابق احباب اور مخیر حضرات کے تعاون سے امسال بھی 12 ربیع الاول ولادت با سعادت نبی آخرالزمان حضرت محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی مناسبت سے امسال بھی 16 مستحق بچیوں کی اجتماع شادیوں کا بیڑا اٹھایا اس طرح انہوں نے 32 خاندانوں کو آپس میں جوڑا اور جہاں ان خاندانوں میں خوشیوں و مسرتوں کا موجب بنے وہاں ان خاندانوں کی دعائیں بھی سمیٹیں۔
    *اللہ تبارک تعالی نو بیاہتا 16 جوڑوں کو ہمیشہ شاد و آباد رکھے اور ان میں اتحاد و اتفاق، باہمی محبت و الفت ، ہم آہنگی اور خوشیاں دیکھنا نصیب فرمائے۔
    موجودہ نفسا نفسی ، خود غرضی ، مفاد پرستی اور لالچ ، حرص ، ہوس کے دور میں اس قسم کا نیک کام اور غریب و مستحق خاندانوں کو آپس میں جوڑنا بلا شبہ اللہ تبارک تعالی کے خاص چنیدہ اور نیک بندوں کا کام ہی ہے قبلہ شاہ صاحب انتہائی مبارک باد اور تحسین و احترام کے مستحق ہیں جو ہر سال یہ کام کرتے اور غریب خاندانوں کے سر پر دست شفقت رکھتے ہیں یہ بہت بڑا کام ہے ہمارے معاشرہ میں جہاں غربت اور جہالت بہت عام ہے اس قسم کے اجتماعی کام کرنے کی اشد ضرورت ہے ان کا کام بلاشبہ معاشرہ کے مخیر اور صاحبان ثروت افراد کے لئے ” رول ماڈل ” کا درجہ رکھتا ہے اللہ تبارک تعالی انہیں اور ان کے ساتھیوں کو جزائے خیر عطاء فرمائے اور وہ یہ نیک کام ہمیشہ اسی طرح کرتے رہیں میں آج اپنی اس پوسٹ کی وساطت سے *صاحبزادہ پیر سید ڈاکٹر غلام مصطفے شاہ گردیزی صاحب اور ان کے دیگر احباب اور ساتھیوں کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کرتا ہوں اور ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ جنہوں نے 32 خاندانوں کو آپس میں ملایا اور ان میں خوشیاں تقسیم کیں اللہ تبارک تعالی ان سب اور ان کے خاندانوں کو ہمیشہ خوش و خرم اور سلامت رکھے۔آمین ثمہ آمین!
    بشکریہ جناب پیر سید ڈاکٹر غلام مصطفے شاہ گردیزی صاحب

Leave your comment
Comment
Name
Email