ہمارے ایمان کی کمی دنیا ئے کفر کو جرات دے رہی ہے(امیر عبدالقدیر اعوان)

ہمارے ایمان کی کمی دنیا ئے کفر کو جرات دے رہی ہے(امیر عبدالقدیر اعوان)

گکھڑ منڈی (ڈاکٹر عصمت علوی)
اُمت مسلمہ کے زوال کا سبب وہ راہ ہے جو عروج کی تھی اُسے ہم نے چھوڑ دیا۔تجدید عہد کرتے ہوئے معافی کے طلب گار ہو کر اگلی زندگی اسوہ حسنہ ﷺ کے مطابق گزاری جائے۔امیر عبدالقدیر اعوان, ہماری سانسو ں کی روانی ہے اور آپ ﷺ کی شان میں گستاخیاں ہورہی ہیں یہ ہماری کمزوریاں اور ہمارے ایمان کی کمی دنیا ئے کفر کو جرات دے رہی ہے حالانکہ اگر ہم قول و فعل میں مضبوط ہوں تو پھر غیرت ایمانی کی للکار کسی کو اجازت نہ دے گی کہ وہ آپ ﷺ کی شان میں گستاخی کرے اور کشمیر پر انڈیا کا لاک ڈاؤن سال سے زیادہ عرصہ ہو گیا ہے ہم ان سے اظہار ہمدردی کرتے ہیں۔ان خیالا ت کا اظہار امیر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان نے سگنیچر مارکی کوٹلی آزاد کشمیر میں ہزاروں افراد سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔
انہوں نے کہا کہ آپ ﷺ کی بعثت اُمت مسلمہ پر اللہ کریم کا بہت بڑا احسان ہے کہ آپ ﷺ کی بعثت نے بندہ مومن کی زندگی کے ہر پہلو کی راہنمائی فرمائی۔ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم زندگی کے ہر شعبے میں اپنی مرضی کرنے کی بجائے اسوہ رسول ﷺ پر عمل پیرا ہوں۔کیفیات قلبی اور برکات نبوت کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اللہ کریم قرآن کریم میں فرماتے ہیں تو میرا ذکر کر میں تیر ا ذکر کروں گا۔اللہ کی یاد قرب الٰہی کا سبب ہے۔اور اس کی نیت خالص ہو جائے گی جو عمل کرے گا اللہ کی رضا کے لیے ہوگا۔
آخر میں حاضرین میں نئے احباب جنہوں نے بیعت کرنی تھی انہیں بیعت سے سرفرا ز فرمایا اور ذکر قلبی کا طریقہ بتایا۔اللہ کی یاد اللہ کے روبرو کر دیتی ہے جس سے بندے کی پسند اللہ کی پسند میں ڈھل جاتی ہے۔یاد رہے کہ یہ پروگرام سلسلہ عالیہ کا پانچواں پروگرام ہے جو کہ بعثت رحمت عالم کے موضوع پر منعقد ہوا اور کوٹلی کی اہم شخصیات نے گزشتہ رات امیر عبدالقدیر اعوان سے ملاقات کی ان میں ڈی سی عمر اعظم صاحب،ایس پی راجہ اکمل،ایس ڈی ایم راجہ طارق،اے ایس پی خرم اقبال،پی ڈی ایس پی راجہ گلزار،سابق سیکرٹری محمود الحسن،ڈاکٹر سید شمس محی الدین،خورشید احمد قادری ایڈووکیٹ،لیاقت مغل ایڈووکیٹ،محمود الحسن جماعت اسلامی،راجہ نجیب ایڈووکیٹ،اے ڈی بھٹی صاحب،سپیشل ونگ،ڈی ایچ او ڈاکٹر نصراللہ،ڈاکٹر نزیر ملک اور راجہ مہتاب کے علاوہ دیگر افراد شامل تھے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Leave your comment
Comment
Name
Email